تو قد و قامت سے شخصیت کا اندازہ نہ کر

کون سا گھر تھا کہ جس گھر سے دھواں اٹھتا نہ تھا
شہر پر یوں آگ کا بادل کبھی برسا نہ تھا ..
یوں تو کس شے کی کمی تھی اس دور میں
آدمی لیکن ہمارے عہد کا اچھا نہ تھا ..
تو قد و قامت سے شخصیت کا اندازہ نہ کر
جتنے اونچے پیڑ تھے اتنا گھنا سیا نہ تھا ..
ہر قدم پر اجنبیت کی نئی دیوار تھی ..
اس کے شہر دل میں جانے کا کوئی رستہ نہ تھا
اب پریشاں ہو کے اسکو ڈھونڈتا پھرتا ہوں میں ..
اک زمانہ کہ وو کہتا تھا میں سنتا نہ تھا
Advertisements

~ by UTS on September 17, 2010.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

 
%d bloggers like this: